سعودی عرب

انصارالله کے خلاف سعودی اخبارات کی دستکاریاں

شیعیت نیوز: سعودی اخبارات نے انصارالله کے چہرے کو داغدار کرنے کی خاطر فوٹو شاپ کا سہارا لیتے ہوئے ایک تعریفی سند میں ہیرا پھیری کر دی۔

یمن کے خلاف برسوں سے جاری جنگ پر پردہ ڈالنے کے لیے سعودی اخبارات اور میڈیا کے ہتھکنڈے ختم ہونے کا نام نہیں لے رہے ہیں۔

اسی سلسلے میں سعودی عرب کے نجی اخبار نے یمن کی قومی نجات حکومت کی وزارت دفاع سے وابستہ ایک جعلی تعریفی سند تیار کرکے انصار اللہ پر اسرائیل سے تعاون کا الزام لگایا ہے۔

ایک یمنی نیوز ویب سائٹ نے اصلی اور نقلی سند جاری کرتے ہوئے سعودی عرب پر طنز کرتے ہوئے کہا ہے کہ لگتا ہے کہ سعودی نہ صرف جنگ میں بلکہ فوٹو شاپ میں بھی ہار گئے ہیں۔

ایک یمنی نیوز چینل نے اس سال یمن پر عربوں کی جارحیت کے آٹھ سال مکمل ہونے پر سعودی اتحاد کی شکست کا مختلف حوالوں سے جائزہ لیا ہے۔

رپورٹ میں سعودی عرب اور امارات کے کسی ایک فوجی اور سیاسی ہدف کی عدم دسترسی، سعودی شہروں کو جنگ میں جھونکنے اور سعودی اتحاد کی جنگ کے آٹھویں سال کے موقع پر شکست اور ناکامی کو بیان کیا گیا ہے۔

یہ بھی پڑھیں : جب یمن اکیلا تھا ایران کے علاوہ اس کو کوئی دوست ایران نہ تھا، ابراہیم الدیلمی

دوسری جانب چیف آف آرمی اسٹاف جنرل قمر جاوید باجوہ کو سعودی عرب کے اعلیٰ ترین اعزاز شاہ عبد العزیز میڈل سے نوازا گیا ہے۔

سعودی ولی عہد و نائب وزیراعظم شہزادہ محمد بن سلمان بن عبدالعزیز نے جدہ میں پاکستانی فوج کے سربراہ جنرل قمر جاوید باجوہ کا استقبال کیا۔

اس دوران انہوں نے مشترکہ دلچسپی کے متعدد امور کے علاوہ دوطرفہ تعلقات، خاص طور پر عسکری شعبوں میں اور انہیں فروغ دینے کے مواقع کا جائزہ لیا۔

نمائندہ خصوصی وزیراعظم پاکستان برائے بین المذاہب ہم آہنگی و مشرق وسطیٰ اور چیئرمین پاکستان علماء کونسل حافظ محمد طاہر محمود اشرفی نے کہا کہ ہم سعودی عرب کی قیادت، خادم الحرمین الشریفین شاہ سلمان بن عبد العزیز اور ولی عہد امیر محمد بن سلمان اور سعودی عرب کی حکومت اور عوام کا شکریہ ادا کرتے ہیں۔

چیئرمین پاکستان علماء کونسل نے کہا کہ جنرل قمر جاوید باجوہ کے لیے سعودی عرب کا اعلیٰ ترین اعزاز شاہ عبد العزیز میڈل پوری قوم اور وطن کے لیے اعزاز ہے، سپہ سالار قوم جنرل قمر جاوید باجوہ، افواج پاکستان اور پوری قوم کو مبارکباد پیش کرتے ہیں۔

متعلقہ مضامین

Back to top button