اہم ترین خبریںپاکستان کی اہم خبریں

صاحبزدہ حامد رضا نے اپنے قتل کی صورت میں رانا ثناءاللہ کو ذمہ دار قرار دے دیا

صاحبزادہ حامد رضا کا کہنا تھا کہ غیر آئینی وزیراعلیٰ کے ماتحت کام کرنا میرے ضمیر کیخلاف ہے، قاتلوں اور ڈاکوؤں کی حکومت کا حصہ نہیں رہ سکتا۔

شیعیت نیوز: سنی اتحاد کونسل کے چیئرمین صاحبزادہ حامد رضا کا کہنا ہے کہ مجھے قتل کیا گیا تو وزیر داخلہ رانا ثنا اللہ ذمہ دار ہوں گے۔ اطلاعات کے مطابق سنی اتحاد کونسل کے سربراہ صاحبزادہ حامد رضا نے سکیورٹی خدشات پر ویڈیو بیان جاری کیا ہے، جس میں ان کا کہنا ہے کہ مجھے قتل کرنے کیلئے ٹیم تشکیل دیدی گئی ہے، مسلسل فون کرکے مارنے کی دھمکیاں دی جا رہی ہیں۔

انہوں نے کہا کہ ورثا میرے قتل کا بدلہ خود لیں گے۔ صاحبزادہ حامد رضا کا کہنا تھا کہ چیف جسٹس مجھے قتل کی دھمکیاں دیئے جانے کا نوٹس لیں، لاہور ہائیکورٹ میں اپنی سکیورٹی بحالی کیلئے اپیل دائر کی ہے۔

یہ بھی پڑھیں: پاراچنار ایک حساس علاقہ ہے،امریکہ، اسرائیل اور بھارت مل کر پاکستان کے ساتھ بھیانک کھیل کھیل رہے ہیں،علامہ راجہ ناصرعباس

واضح رہے کہ گزشتہ ماہ حامد رضا نے چیئرمین قرآن بورڈ پنجاب کے عہدے سے استعفیٰ دے دیا تھا۔ ان کا کہنا تھا کہ سابق وزیراعظم عمران خان اور عثمان بزدار کا شکر گزار ہوں، جنہوں نے مجھے یہ ذمہ داری دی، قرآن بورڈ کیلئے بہترین خدمات دیں اب استعفیٰ دینا مناسب سمجھتا ہوں۔ صاحبزادہ حامد رضا کا کہنا تھا کہ غیر آئینی وزیراعلیٰ کے ماتحت کام کرنا میرے ضمیر کیخلاف ہے، قاتلوں اور ڈاکوؤں کی حکومت کا حصہ نہیں رہ سکتا۔ خیال رہے کہ صاحبزادہ حامد رضا کو جولائی 2020 میں قرآن بورڈ کا چیئرمین مقرر کیا گیا تھا۔

متعلقہ مضامین

Back to top button