مقبوضہ فلسطین

مغربی کنارے میں انقلاب کی آگ قابضین کا خاتمہ کیے بغیر نہیں بھجنے والی، ترجمان حازم قاسم

شیعیت نیوز: فلسطین کی اسلامی مزاحمتی تحریک حماس کے ترجمان حازم قاسم نے مغربی کنارے میں صیہونی غاصبوں اور آبادکاروں کی بے دخلی تک انقلاب کو جاری رکھنے کی ضرورت پر زور دیا۔

اناطولیہ نیوز ایجنسی کی رپورٹ کے مطابق حماس کے ترجمان حازم قاسم نے رام اللہ کے مغرب میں حلمش قصبے کے قریب فلسطینی گاڑی کی ٹکر سے ایک صہیونی فوجی کے زخمی ہونے پر ردعمل ظاہر کیا۔

حازم قاسم نے کہا کہ اس آپریشن نے ایک بار پھر ظاہر کیا کہ ہمیں پورے مغربی کنارے میں ایک انقلابی کارروائی کا سامنا ہے۔

رپورٹ کے مطابق حماس کے ترجمان نے یہ بھی کہا کہ مغربی کنارے کے شہروں میں مزاحمت کا پھیلنا قابضین کے وجود، فلسطینی عوام کے خلاف ان کی مجرمانہ پالیسیوں، اس قوم کے مقدسات اور اس کے بہادر اسیروں کے خلاف مظالم پر ایک فطری ردعمل ہے۔

انہوں نے تاکید کی کہ مغربی کنارے میں انقلاب کی آگ صیہونی غاصبوں اور آبادکاروں کو نکال باہر کرنے کے سوا نہیں بجھے گی۔

یہ بھی پڑھیں : اسرائیلی فوج کی ریاستی دہشت گردی میں 80 سالہ بزرگ فلسطینی شہید

یاد رہے کہ منگل کو صیہونی حکومت کے ذرائع ابلاغ نے اطلاع دی کہ اس حکومت کے ایک 19 سالہ فوجی کو ہلمش قصبے کے قریب نفیہ تسوف چوراہے کے قریب ایک فلسطینی گاڑی نے ٹکر ماردی۔

رپورٹ کے مطابق اسرائیلی فوجی کو ہیلی کاپٹر کے ذریعے اسرائیلی اسپتال منتقل کیا گیا اور فلسطینی ڈرائیور کو صیہونی فوج نے گرفتار کرلیا۔

دوسری جانب اسلامی مزاحمتی تحریک حماس کے غزہ کی پٹی میں جماعت کے صدر یحییٰ السنوار کل بدھ کے روز انتقال کرگئے۔ وہ طویل عرصے سے کینسر کےمرض کا شکار تھے۔ ان کی عمر90 سال تھی۔

رپورٹ کے مطابق حماس کی طرف سے جاری ایک بیان میں مرحوم کی خدمات پر انہیں خراج عقیدت پیش کیا گیا ہے۔ بیان میں کہا گیا ہے کہ مرحوم ایک عابد، زاہد، صابر اور ذمہ دار انسان تھے۔

بیان میں کہا گیا ہے کہ حماس اور فلسطینی قوم مرحوم کی قربانیوں کوہمیشہ یاد رکھے گی۔ قابض دشمن نے کئی بار ان کا گھر مسمار کیا اور انہیں شہید کرنے کی مذموم کوششیں کی گئیں۔

ٹیگز

متعلقہ مضامین

Back to top button
Close