دنیا

ایران اور روس کے درمیان یوکرائن جنگ میں تعاون کا کوئی ثبوت نہیں ملا، وائٹ ہاؤس کا اعتراف

شیعیت نیوز: وائٹ ہاؤس سے جاری بیان میں کہا گیا ہے کہ یوکرائن جنگ میں ایران اور روس کے درمیان کسی تعاون کا اب تک کوئی ثبوت نہیں ملا ہے۔

الجزیرہ کی رپورٹ کے مطابق وائٹ ہاؤس سے جاری بیان میں کہا گیا ہے کہ یوکرائن جنگ میں ایران اور روس کے درمیان کسی تعاون کا اب تک کوئی ثبوت نہیں ملا ہے۔ روس کی جانب سے ایرانی ڈرون استعمال کرنے کے شواہد ناکافی ہیں۔

امریکی صدارتی محل سے جاری ایک بیان میں کہا گیا ہے کہ تہران اور ماسکو کے درمیان دفاعی شعبے میں تعلقات مزید مضبوط ہورہے ہیں۔ روس نے ڈرون طیاروں کے خام مواد تہران سے برامد کئے ہیں بنابراین ایک سال کے اندر روس بھی ڈرون طیارے بنانے میں کامیاب ہوگا۔

یہ بھی پڑھیں : اگر ہیثم التمیمی عیسائی ہوتا تو آپ پھر بھی خاموش تماشائی بنے رہتے؟، عرب سوشل ایکٹوسٹ

بیان میں مزید کہا گیا ہے کہ روس نے ایران کو میزائل اور ائیرڈیفنس کے حوالے سے تعاون کی پیشکش کی ہے۔ ہم کوشش کررہے ہیں کہ ان معاہدوں کے بارے میں تفصیلات منظر عام پر لاکر انہیں ناکام بنائیں۔

اس سے پہلے فروری میں بھی امریکہ نے دونوں ملکوں کے درمیان دفاعی تعاون کے سلسلے کو ناکام بنانے کا دعویٰ کیا تھا۔

وائٹ ہاؤس کے سیکورٹی کونسل کے ترجمان جان کربی نے کہا تھا کہ کہ ہمارے پاس ایسے وسائل موجود ہیں جن کو بروئے کار لاتے ہوئے ایران اور روس کے درمیان بڑھتے دفاعی تعلقات کو روک سکتے ہیں۔

امریکہ نے مزید کہا ہے کہ مغربی ممالک کی جانب سے پابندیوں کے بعد روس نے ایران کی طرف دیکھنا شروع کیا ہے۔ اسی سلسلے میں گذشتہ سال جدید ترین روسی جنگی طیارے بھی ایران کو فروخت کرنے کا معاہدہ ہوگیا ہے۔

ایرانی ہواباز تربیت کے لئے روس کا دورہ کررہے ہیں۔ روسی جدید سوخو طیارے ملنے کے بعد ایران کی خطے میں فضائی طاقت مزید مضبوط ہوجائے گی۔

متعلقہ مضامین

Back to top button