مشرق وسطی

برسوں بعد متحدہ عرب امارات سے شام کے لئے پہلی پرواز

شیعیت نیوز: دمشق نے گذشتہ کئی سالوں سے معطل، متحدہ عرب امارات کے شارجہ ائیرپورٹ سے ’’لاذقیہ‘‘ کے لئے پہلی پرواز کی خبر دی ہے۔

شام کی وزارت ٹرانسپورٹ نے اعلان کیا کہ متحدہ عرب امارات سے شام کے لیے پہلی براہ راست پرواز کئی برسوں کی معطلی کے بعد ہوئی اور یہ پہلی پرواز شامی ایئرلائن’’اجنحۃ الشام‘‘ کی تھی۔ جس میں 151 مسافروں کو شارجہ ایئرپورٹ سے لاذقیہ ایئرپورٹ منتقل کیا گیا۔

نجی اخبارات کا کہنا ہے کہ یہ فلائٹ دمشق انٹرنیشنل ائیرپورٹ پر لینڈ ہونا تھی، لیکن اسرائیل کے تازہ حملے کے سبب اور ائیر پورٹ پر کچھ عمارات کی تباہی کی وجہ سے ایسا ممکن نہ ہوسکا۔

یاد رہے کہ 2012ء میں شام میں بدامنی کے آغاز سے کئی عرب ممالک نے شام کے ساتھ اپنے تعلقات منقطع کر لیے تھے، تاہم حالیہ برسوں میں ان تعلقات کو بحال کرنے کے لیے اقدامات کیے گئے ہیں اور جون کے اوائل میں کویت کے ہوائی اڈے سے حلب کے بین الاقوامی ہوائی اڈے کے لیے پہلی پرواز نے اُڑان بھری تھی۔

یہ بھی پڑھیں : آئندہ جمعہ اہل فلسطین بڑی تعداد میں مسجد اقصی حاضری دیں، القدس اتھارٹی

عرب لیگ کی جانب سے دوہزار گیارہ میں شام کی رکنیت ختم کرنے کے بعد امارات سمیت دیگر عرب ممالک نے اپنے سفیروں کو شام سے واپس بلا لیا تھا تاہم متحدہ عرب امارات نے دو ہزارانیس میں دمشق میں اپنا سفارت خانہ دوبارہ کھول دیا۔

یہاں یہ امر قابل ذکر ہے کہ عرب-شام کشیدگی کی ایک دہائی کے بعد،’’بن زاید‘‘ کے دمشق کے دورے کے بعد متحدہ عرب امارات اور شام کے درمیان تعلقات کا ایک نیا دور شروع ہوا۔

شام کی وزارت ثقافت نے حال ہی میں ثقافتی اور ادبی نمائشوں میں بھرپور حصہ لیا ہے، جس میں خطے کے عرب ممالک کے ساتھ تعاون اور تعلقات کو وسعت دینے کی اپنی کوششیں ظاہر کی گئی ہیں۔

دوسری طرف گذشتہ سال کے موسم خزاں میں شام ونگز ایئر لائنز کی طرف سے دمشق اور ابوظہبی کے مابین پہلی پرواز چلائی گئی تھی۔

متعلقہ مضامین

Back to top button