دنیا

افغانستان میں زلزلہ، صوبے بدغیث میں 26 افراد جاں بحق

شیعیت نیوز: افغانستان میں 5.3 شدت کا زلزلہ آیا ہے، جس کے باعث صوبے بدغیث میںمتعدد گھروں کی چھتیں گر گئیں، جس کے نتیجے میں اب تک 26 افراد جاں بحق ہوچکے ہیں۔

بین الاقوامی میڈیا کے مطابق مغربی افغانستان میں صوبے بدغیث میں ڈسٹرکٹ گورنر محمد صالح نے بتایا کہ زلزلے کے نتیجے میں گھروں کی چھتیں گرنے کے سبب 26 افراد جاں بحق ہوئے ہیں۔

امریکی جیولوجیکل سروے کے مطابق زلزلے کی شدت 5.3 ریکارڈ کی گئی ہے۔ جاں بحق ہونے والے افراد میں 5 خواتین اور 4 بچے بھی شامل ہیں۔

اس زلزلے سے صوبے بدغیث کے ’مقر‘ ضلع میں بھی خاصا نقصان ہوا لیکن ممکنہ جانی نقصان کے بارے میں ابھی تفصیلات سامنے نہیں آ پائی ہیں۔

بغدیث کے ضلع موقر میں بھی زلزلے کے اطلاع ہے تاہم ہلاکتوں کے حوالے سے اب تک کوئی اطلاع موصول نہیں ہوئی ہے۔

خیال رہے کہ 3 دن پہلے افغانستان میں ہندوکش کے علاقے میں بھی زلزلہ آیا تھا جس کے جھٹکے جموں و کشمیر تک محسوس کیے گئے تھے تاہم کوئی جانی و مالی نقصان کی اطلاع نہیں آئی۔

یہ بھی پڑھیں : سعودی اتحاد کو شکست سے بچانے کے لیے امریکہ براہ راست مآرب کی جنگ میں کود پڑا

دوسری جانب افغان طالبان نے غیر قانونی سرگرمیوں میں ملوث ہونے کے جرم اور داعش کے ساتھ رابطے کے شبہ میں 3 ہزار کے قریب طالبان اہلکاروں کو برطرف کردیا ہے۔ طالبان حکومت نے عوامی شکایات پر غیر قانونی سرگرمیوں میں ملوث تقریباً 3 ہزار کے لگ بھگ طالبان اہلکاروں کو برطرف کردیا ہے۔

اطلاعات کے مطابق شفافیت کو برقرار رکھنے کے لیے طالبان حکومت نے ایسے 2 ہزار 840 طالبان اہلکاروں کو برطرف کردیا ہے جو اپنی غیر قانونی سرگرمیوں کے باعث طالبان حکومت کی بدنامی کا باعث بن رہے تھے۔

طالبان حکومت کے وزیر لطیف اللہ حکیمی نے عالمی میڈیا کو بتایا کہ عوامی شکایات اور دیگر ذرائع سے حاصل ہونے والی معلومات کے بعد ان ارکان کے خلاف شفاف جانچ پڑتال کی گئی۔

لطیف اللّٰہ حکیمی نے مزید بتایا کہ مکمل تحقیقات کے بعد 2 ہزار 480 ارکان کو برطرف کیا گیا یہ لوگ کرپشن، منشیات کی اسمگلنگ اور لوگوں کی نجی زندگیوں میں مداخلت کرنے میں ملوث تھے اور بعض داعش کے ساتھ بھی منسلک تھے۔

ٹیگز

متعلقہ مضامین

Back to top button
Close