اہم ترین خبریںمقبوضہ فلسطین

مسلم دنیا قبلہ اول کے حوالے سے اپنے بیانیے میں اتفاق پیدا کرے، مبلغ مسجد اقصیٰ

شیعیت نیوز: مسجد اقصیٰ کے مبلغ اور ممتاز عالم دین الشیخ عکرمہ صبری نے کہا ہے کہ ہاشمی سرپرستی مقبوضہ شہر بیت المقدس میں مقدس مقامات کی حفاظت کے لیے ایک حفاظتی والو کا درجہ رکھتی ہے۔

الشیخ صبری نے ’’قدس پریس‘‘ کو ایک بیان میں مزید کہا کہ اردن کی حکومت اور قوم القدس اور مسجد اقصیٰ کے ساتھ والہانہ عقیدت رکھتی ہے۔عرب اور اسلامی ممالک کے اقوام بھی القدس کے حوالے سے اردن کی سرپرستی پر متقف ہیں۔ القدس کو یہودیانے اور مسجد اقصیٰ کی بے حرمتی کے خلاف پوری مسلم امہ متحد ہے۔

انہوں نے القدس شہر اور مسجد اقصیٰ کو درپیش خطرات کی طرف اشارہ کرتے ہوئے کہا کہ اسرائیلی پولیس اور فوج کی حفاظتی چھتری تلےیہودی انتہا پسند بار بار مسجد اقصیٰ کی بے حرمتی کرتے ہیں۔

مسجد اقصیٰ کے مبلغ نے زور دے کر کہا کہ اس وقت پوری مسلم دنیا اور عرب اقوام کو قبلہ اول کے حوالے سے ایک بیانیہ اختیار کرنے کی ضرورت ہے تاکہ مسلمانوں کے اس مقدس مقام کو یہودیانے کی سازشوں کو ناکام بنایا جا سکے۔

الشیخ صبری نے مسجد الاقصیٰ کے نیچے صہیونیوں کی طرف سے کی جانے والی کھدائیوں کو خطرناک قرار دیتے ہوئےکہا کہ دشمن قبلہ اول کی بنیادوں کو کمزور کرکے مسجد اقصیٰ کے خلاف گھناؤنی سازش کررہا ہے۔

یہ بھی پڑھیں : شہید حماد ابو جلدہ کا خون رائیگاں نہیں جائے گا، حماس

دوسری جانب قابض اسرائیلی فوج نے مقبوضہ بیت المقدس کے شہر نابلس اوربیت المقدس کے الرام قصبے پر دھاوا بول دیا جس میں کوئی جانی نقصان نہیں ہوا۔القدس میں قابض فوج نے آج صبح الرام قصبے پر دھاوا بول دیا اور قابض اسرائیلی فوجیوں نے اس کے گردونواح میں بھاری نفری تعینات کر دی۔

دراندازی کے دوران قابض اسرائیلی فوج نے اس مقام پر سرچ آپریشن بھی کیا جہاں کل شام ایک گاڑی میں اچانک دھماکہ ہوا۔

نابلس میں ایک فوج نے شہر پر دھاوا بول دیا اور اس کی گلیوں میں وسیع پیمانے پر پھیل گئے اور قابض اسرائیلی افواج نے نابلس کے شمال مغرب میں برقع گاؤں کے داخلی راستے پر ایک فوجی چوکی قائم کی۔

مزاحمت کاروں نے قابض اسرائیلی افواج کی جینین میں اچانک دراندازی کو پسپا کر دیا۔

مقامی ذرائع نے بتایا کہ قابض اسرائیلی افواج کے ساتھ پرتشدد جھڑپیں شروع ہوئیں اور جنین کے مرکز میں واقع عظیم جینین مسجد کے قریب مرکوز تھیں۔

متعلقہ مضامین

Back to top button