دنیا

یورپی یونین کی صحافی شیریں ابو عاقلہ کے تشییع جنازے پر اسرائیلی فوج کے حملے کی مذمت

شیعیت نیوز: یورپی یونین نے الجزیرہ کی شہیدہ فلسطینی صحافی شیریں ابو عاقلہ کے تشییع جنازے پر اسرائیلی فوج اور سکیورٹی دستوں کی بربریت کی شدید الفاظ میں مذمت کی ہے۔

یورپی یونین کی جانب سے یورپین خارجہ امور کے سربراہ جوزپ بوریل نے کہا کہ یورپین یونین مقبوضہ مشرقی یروشلم میں فلسطینی صحافی شیریں ابو عاقلہ کے جنازے کے جلوس کے دوران سامنے آنے والے مناظر سے حیران ہے۔

انہوں نے کہا کہ یورپین یونین ماتمی جلوس کے شرکاء کے خلاف طاقت کے غیر مناسب استعمال اور اسرائیلی پولیس کی طرف سے ہتک آمیز رویے کی مذمت کرتی ہے۔

انہوں نے کہا کہ کسی جنازے کو پر امن الوداع کی اجازت نہ دینا اور سوگواروں کو بغیر کسی ایذاء اور تذلیل کے سکون سے غمگین نہ ہونے دینا، کم سے کم انسانی احترام ہے۔

یورپین خارجہ امور کے سربراہ جوزپ بوریل نے اس موقع پر یونین کی جانب سے مطالبہ کیا کہ یورپین یونین اسرائیل سے ایک مکمل اور آزادانہ تحقیقات کے اپنے مطالبے کا اعادہ کرتی ہے کہ شیریں ابو عاقلہ کی موت کی تحقیقات کرکے ان کے قتل کے ذمہ داروں کو انصاف کے کٹہرے میں لایا جائے۔

یہ بھی پڑھیں : الجزیرہ کی رپورٹر شہید شیریں ابو عاقلہ کے جلوس جنازہ پر حملے کی عالمی سطح پرمذمت

واضح رہے کہ امریکہ اور یورپی یونین دونوں فلسطینیوں پر ہونے والے اسرائيلی مظآلم میں برابر کے شریک ہیں۔ امریکہ اور یورپی یونین کی حمایت کی بنا پر فلسطینوں پر اسرائیلی سنگین جرائم کا ارتکاب کرتا رہتا ہے۔

دوسری جانب اقوام متحدہ کی سلامتی کونسل نے اسرائیلی فوجیوں کے ہاتھوں الجزیرہ ٹی وی کی فلسطینی صحافی شیریں ابو عاقلہ کے بہیمانہ قتل کی مذمت کی ہے۔

اطلاعات کے مطابق سکیورٹی کونسل نے اپنے ایک بیان میں مقبوضہ فلسطینی علاقہ جنین میں اسرائیلی فوجیوں کے ہاتھوں الجزیرہ ٹی وی کی فلسطینی صحافی کے قتل کی شدید الفاظ میں مذمت کی ہے۔

سکیورٹی کونسل نے شیریں ابو عاقلہ ک قتل کی صاف و شفاف تحقیقات کا مطالبہ بھی کیا ہے۔ اقوام متحدہ کی سکیورٹی کونسل نے اپنے بیان میں صحافیوں کی حفاظت پر بھی تاکید کی ہے۔

سلامتی کونسل کا کہنا ہے کہ وہ مقبوضہ فلسطین کی تازہ ترین صورتحال پر قریبی نظر رکھے ہوئے ہے۔

متعلقہ مضامین

Back to top button
Close