اہم ترین خبریںمقبوضہ فلسطین

جنین پناہ گزین کیمپ میں فلسطینیوں کے ساتھ جھڑپ میں اسرائیلی فوجی ہلاک

شیعیت نیوز: جمعہ کے روز غرب اردن کے شمالی شہر جنین پناہ گزین کیمپ کے مغرب میں ایک اسرائیلی فوجی مسلح جھڑپوں کے نتیجے میں زخموں کی تاب نہ لاتے ہوئے ہلاک ہوگیا۔

عبرانی نیوز ویب سائٹ’وائی نیٹ‘کے مطابق افسر کی جان بچانے کی کوششوں کے دوران حیفا کے رمبام اسپتال میں موت ہو گئی۔

یہ افسر الیمام اسپیشل یونٹ کے ان ارکان میں سے ایک ہے جس نے جنین پناہ گزین کیمپ کے مغرب میں واقع الھدف محلے میں محمود الدبعی کا محاصرہ کرنے کی کارروائی میں حصہ لیا۔

عبرانی چینل سیون نے اطلاع دی تھی کہ اسپیشل یونٹ کا ایک اسرائیلی افسر جھڑپوں میں شدید زخمی ہوا ہے جو کہ جنین کیمپ میں ایک مطلوب مزاحمتی جنگجو کے گھر کے محاصرے کے دوران ہوئی تھی۔

اس تناظر میں اسلامی جہاد تحریک کے عسکری ونگ القدس بریگیڈز نے جمعہ کے روز کہا کہ اس نے قابض اسرائیلی فوج کی ایک پارٹی پر گھات لگا کرحملہ کیا جس میں ایک صیہونی فوجی جہنم واصل ہوگیا۔

القدس بریگیڈز کی طرف سے جاری کردہ فوجی بیان میں کہا گیا ہے کہ قابض اسرائیلی فوج القدس میں جنین بریگیڈ کے جنگجوؤں میں سے ایک مجاہد محمود الدبعی کو گرفتار کرنے کے مقصد سے کیمپ میں گھس گئیں۔

یہ بھی پڑھیں : فلسطینی صحافی شیرین ابو عاقلہ سپرد خاک، جنازے میں عوام کاجم غفیر

دوسری جانب جمعہ کوقابض اسرائیلی فوج کے ایک افسر نے کہا ہے کہ جنین میں جمعہ کے روز ہم پر بڑی تعداد میں گولیاں چلائیں گئیں۔

اسرائیلی صحافی تل لیو رام کے مطابق سینیر افسر کے حوالے سے کہا گیا ہے۔ انہوں نے کہاکہ آج  جنین میں فلسطینی بندوق برداروں کی طرف سے فورسز پر فائرنگ کا واقعہ ہم نے کئی سالوں میں دیکھا گیا ہے۔

اسرائیلی افسر نے مزید کہا کہ ہم پر ہزاروں گولیاں چلائی گئیں۔ 20 سال سے زیادہ عرصے میں میں نے ایسا کچھ نہیں دیکھا۔”

جمعہ کو اسرائیلی میڈیا نے اسرائیلی الیمام یونٹ کے ایک افسر کی ہلاکت کا اعلان کیا ہے۔ اسرائیلی فوج نے اپنے ایک اہلکارکی ہلاکت کا اعتراف کیا۔

چینل 14 کے مطابق عبرانی یمام یونٹ کا افسر نوم راز (47 سال) جنین میں فلسطینی بندوق برداروں کے ساتھ جھڑپ کے دوران زخموں کی تاب نہ لاتے ہوئے چل بسا۔

متعلقہ مضامین

Back to top button
Close