اہم ترین خبریںدنیا

امریکا، میساچیوسٹس یونیورسٹی میں اسرائیل کیخلاف احتجاج پر طلبا معطل

شیعیت نیوز: اسرائیل کے خلاف مظاہرہ کرنے پر امریکا کی میساچیوسٹس یونیورسٹی نے طلبا کو معطل کردیا۔

میساچیوسٹس انسٹیٹیوٹ آف ٹیکنالوجی نے جنوبی غزہ میں رفح پر اسرائیلی فوج کے زمینی حملے کے خلاف احتجاج کرنے والے طلبا کے گروہ کو معطل کردیا۔

صدر جامعہ سیلی کورن بلتھ نے اپنے ویڈیو پیغام میں طلبا کی معطلی کا اعلان کرتے ہوئے بتایا کہ طلبا نے احتجاج کے لیے یونیورسٹی سے پیشگی اجازت نہیں مانگی۔

جواب میں طلبا گروہ نے بحالی کا مطالبہ کرتے ہوئے کہا ہے کہ جامعہ کا یہ فیصلہ فلسطینیوں کے حق میں وکالت پر حملہ ہے۔

ہمارے 13 طلبا کو انفرادی طور پر مستقل معطلی کی دھمکیاں دی گئیں۔

یہ بھی پڑھیں:جنوبی لبنان پر صیہونی حملوں کی بابت یونیفل کا اظہار تشویش

انہوں نے جامعہ کی انتظامیہ کو تنقید کا نشانہ بناتے ہوئے کہا کہ جامعہ اپنے غیر منصفانہ فیصلے لاگو کرنا چاہتی ہے، انتظامیہ ہم سے احتجاج کرنے کا حق چھین رہی ہے۔

ہمارا احتجاج اسرائیل کی فلسطین میں ہونے والی نسل کشی کے خلاف تھا۔

واضح رہے کہ گزشتہ سال اکتوبر میں شروع ہونے والی اس جنگ میں اسرائیلی فوج کی جنوبی غزہ اور رفح میں بمباری سے فلسطینی شہدا کی مجموعی تعداد 28 ہزار 500 سے زیادہ ہوگئی ہے۔

اسرائیلی حملوں میں غزہ کی 90 فیصد سے زائد آبادی ہجرت کر کے رفح کے مختلف کیمپوں میں قیام پذیر ہے، جہاں لاکھوں فلسطینی کسمپرسی کی زندگی گزارنے پر مجبور ہیں۔

متعلقہ مضامین

Back to top button