دنیا

مغرب مارکیٹ کی معیشت کا سب سے بڑا دشمن ہے، میخائل الیانوف

شیعیت نیوز: ویانا میں قائم بین الاقوامی تنظیموں میں روس کے مستقل نمائندے میخائل الیانوف نے مغربی ممالک کی جانب سے ملک کے تیل اور گیس کی قیمتوں میں حد بندی کرنے کی کوشش کو ایک طرح کی مطلق العنانیت قرار دیا اور اسے ایک لاحاصل اقدام قرار دیا۔

رپورٹ کے مطابق ویانا میں مقیم بین الاقوامی تنظیموں میں روس کے مستقل نمائندے میخائل الیانوف نے جمعہ کو یورپی یونین کی جانب سے تیل کی قیمتوں کی حد کو نافذ کرنے کے منصوبے کے بارے میں کہا کہ ’’مغرب مارکیٹ کی معیشت کا سب سے بڑا دشمن ہے۔‘‘

یہ بھی پڑھیں : یوکرین کو نیٹو مدد کرتا رہے گا، چاہے جتنا وقت لگے، ینس اسٹولٹن برگ

اولیانوف نے ایک ٹویٹر پیغام میں لکھا کہ مغربی ممالک نے درحقیقت روسی تیل اور گیس کی درآمدات پر قیمتوں کی حد لگا کر اپنی مطلق العنانیت کو معاشی میدان تک بڑھا دیا ہے، لیکن انہیں معلوم ہونا چاہیے کہ یہ تمام کوششیں بے سود ہوں گی کیونکہ روس ان حالات میں اپنی توانائی کی مصنوعات برآمد کرتا ہے۔ نہیں کریں گے۔

اس سے قبل بلومبرگ نے اپنے ذرائع کا حوالہ دیتے ہوئے اطلاع دی تھی کہ یورپی یونین گروپ آف 7 کے ساتھ مل کر روسی تیل کی قیمت کی حد کو 65 سے 70 ڈالر فی بیرل کی سطح پر بڑھانے کی کوشش کر رہی ہے۔

یہ بھی پڑھیں : سپاہ پاسداران کی بری افواج مغربی سرحدوں پر اپنی موجودگی کو مزید مضبوط کرے گی

روس کے نائب وزیر اعظم الیگزینڈر نوواک نے اکتوبر کے وسط میں کہا تھا کہ ماسکو ان ممالک کو تیل برآمد نہیں کرے گا جو روسی تیل کی قیمت کی حد مقرر کرتے ہیں۔

روسی صدر ولادیمیر پوٹن نے بھی ایک تقریر میں اعلان کیا کہ ماسکو دوسروں کی فلاح و بہبود کے لیے اپنے توانائی کے ذرائع کی برآمد کے لیے قیمت کی حد مقرر کرنے جا رہا ہے۔

متعلقہ مضامین

Back to top button