ایران

حتمی معاہدے میں ایرانی سرخ لکیروں کا لحاظ کیا جائے گا، شہریار حیدری

شیعیت نیوز: ایرانی پارلیمنٹ کے کمیشن برائے قومی سلامتی اور خارجہ پالیسی کے امور کے رکن شہریار حیدری نے کہا ہے کہ ایرانی مذاکراتی ٹیم نے مذاکرات کے تمام عرصے کے دوران، قومی مفادات کو مد نظر رکھا ہے اور حتمی معاہدے میں ایرانی سرخ لکیروں کا لحاظ کیا جائے گا۔

شہریار حیدری نے ارنا نمائندے سے گفتگو کرتے ہوئے پارلیمنٹ کے کمیشن برائے قومی سلامتی اور ایران کی اعلی قومی سلامتی کونسل کے درمیان اجلاس پر تبصرہ کرتے ہوئے کہا کہ ایرانی مذاکراتی ٹیم نے مذاکرات کے تمام عرصے کے دوران، قومی مفادات کو مد نظر رکھا ہے اور حتمی معاہدے میں ایرانی سرخ لکیروں کا لحاظ کیا جائے گا۔

انہوں نے کہا کہ حتمی نتیجے تک پہنچنے کیلئے معاہدے کے متن کا تبادلہ کیا جا رہا ہے؛ لہذا ایران اور گروہ 1+4 کے وزرائے خارجہ کے اگلے اجلاس کے نتیجے میں معاہدہ طے پایا جائے گا۔

ایرانی پارلیمنٹ کے کمیشن برائے قومی سلامتی اور خارجہ پالیسی کے رکن نے کہا کہ حتمی معاہدے کے دوران، ایران اور امریکہ کے درمیان کوئی براہ راست مذاکراہ نہیں ہوگا۔

یہ بھی پڑھیں : تمام ملکی ادارے اربعین کو عظیم الشان طریقے سے منعقد کرنے کے لئے سرگرم عمل رہیں، رئیسی

دوسری جانب ایران کی عدلیہ کے ترجمان نے آج اپنی پریس کانفرنس میں سویڈش جاسوس کے کیس کی نئی تفصیلات پیش کیں۔

ایران کی عدلیہ کے ترجمان نے آج اپنی پریس کانفرنس میں سویڈش جاسوس کے کیس کی نئی تفصیلات پیش کیں۔

مسعود ستایشی نے آج بروز منگل اپنی ایک پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے کہی۔

انہوں نے کہا کہ سویڈش جاسوس کے کیس کی تازہ ترین صورتحال کے حوالے سے ایک سوال جواب میں کہا کہ یہ مقدمہ تہران کے خصوصی پراسیکیوٹر کے دفتر میں زیر تفتیش ہے اور اس شخص کا الزام جاسوسی ہے اور وہ ابھی تک زیر حراست ہے۔

ستایشی نے کہا کہ سویڈش جاسوس کے حوالے سے کچھ دستاویزات حاصل کی گئی ہیں، اور یہ کیس ابتدائی تفتیش کے مرحلے میں ہے اور ممکن ہے کہ کچھ دیگر الزامات شامل کیے جائے۔

ایرانی وزارت انٹیلی جنس نے 30 جولائی کو اپنے جاری کردہ ایک بیان میں کہا کہ امام زمانہ کے گمنام سپاہیوں نے سوئیڈن سے متعلق ایک شہری کو جاسوسی کے الزام پر شناخت کرکے گرفتار کیا ہے۔

متعلقہ مضامین

Back to top button