اہم ترین خبریںپاکستان

کوئٹہ کے 6حلقوں کو 3 حلقوں میں ضم کرنا الیکشن کمیشن کاغیر منصفانہ عمل ہےجو کسی صورت قبول نہیں ، ارباب لیاقت ہزارہ

اتنی دیر سے دونوں اراکین اسمبلی سو رہے تھے، اسی لئے انہیں اتنے بڑے مسئلے کی خبر ہی نہیں ہوئی۔ نہ ہی انکی جانب سے تحفظات کا اظہار کیا گیا۔

شیعیت نیوز: مجلس وحدت مسلمین کوئٹہ سٹی کے رہنماء ارباب لیاقت علی ہزارہ نے اپنے بیان میں کوئٹہ کے بلدیاتی انتخابات کی نئی حلقہ بندیوں پر اپنے تحفظات کا اظہار کرتے ہوئے کہا ہے کہ الیکشن کمیشن کی نئی حلقہ بندیاں ناقابل قبول ہے۔ جن حلقوں کو مزید حلقوں میں تقسیم کرکے عوام کو نمائندوں کے انتخاب کا بہتر موقع ملنا چاہئیے تھا، ان حلقوں کو یکجا کرنا لوگوں کے حقوق پر ڈاکہ ڈالنے کے مترادف ہے۔

یہ بھی پڑھیں:علامہ سید عبد الحسین الحسینی مجلس علمائے شیعہ خیبرپختونخوا کے صدر منتخب

انہوں نے نئی حلقہ بندیوں پر بلوچستان اسمبلی میں ایچ ڈی پی کے نمائندوں کی خاموشی پر سوال اٹھاتے ہوئے کہا کہ صوبائی اسمبلی میں دو نمائندوں کی موجودگی کے باوجود چھ حلقوں کو تین حلقوں میں تبدیل کیا گیا۔ ہمیں سمجھ نہیں آتا کہ ایچ ڈی پی کے اراکین اسمبلی کس لئے ایوان میں بیٹھے ہوئے ہیں۔

یہ بھی پڑھیں:عزاداروں پر ایف آئی آرز کا سلسلہ بند کیا جائے، بصورت دیگر اس کیخلاف بھرپور احتجاج کیا جائے گا ، علامہ شبیر میثمی

ارباب لیاقت علی ہزارہ نے کہا کہ چھ حلقوں کا تین حلقوں میں تبدیل ہوجانا ایچ ڈی پی کے صوبائی وزیر اور رکن صوبائی اسمبلی کی نااہلی کا منہ بولتا ثبوت ہے۔ اتنی دیر سے دونوں اراکین اسمبلی سو رہے تھے، اسی لئے انہیں اتنے بڑے مسئلے کی خبر ہی نہیں ہوئی۔ نہ ہی انکی جانب سے تحفظات کا اظہار کیا گیا۔

متعلقہ مضامین

Back to top button