ایران

اقوام متحدہ کی رپورٹ سیاسی محرکات کی حامل اور غیر منصفانہ ہے، خطیب زادہ

شیعیت نیوز: ایرانی وزارت خارجہ کے ترجمان نے ایران میں انسانی حقوق کی صورتحال کے حوالے سے اقوام متحدہ کی جنرل اسمبلی کی حالیہ قرارداد کو سیاسی محرکات ، جانبدارانہ اور غیر منصفانہ قرار دیا۔

یہ بات سعید خطیب زادہ نے منگل کے روز اقوام متحدہ کی جنرل اسمبلی کی حالیہ قرارداد اور اسلامی جمہوریہ ایران میں انسانی حقوق کی صورتحال پر اقوام متحدہ کے سکریٹری جنرل کی عبوری رپورٹ کے بارے میں ارنا نیوز ایجنسی کے رپورٹر کے سوال کے جواب میں کہی۔

انہوں نے اقوام متحدہ کی جنرل اسمبلی کی حالیہ ایران مخالف قرارداد کو سیاسی محرکات کا حامل اور انصاف سے دور قرار دیا ہے۔

خطیب زادہ نے کہا کہ جیسا کہ بارہا یہ واضح کیا جا چکا ہے کہ اس قسم کی قراردادیں غیر منصفانہ اور سیاسی محرکات اور خاص اہداف کی حامل ہوتی ہیں اور انہیں عالمی سطح پر انسانی حقوق کی صورتحال کو ارتقا بخشنے کے مقصد سے تیار نہیں کیا جاتا اور نہ ہی ان قراردادوں کو تمام رکن ممالک کی رضایت حاصل ہوتی۔

یہ بھی پڑھیں : پابندیوں کو سیاسی حربے کے طور پر استعمال نہیں کرنا چاہئیے، مجید تخت روانچی

ایرانی محکمہ خارجہ کے ترجمان کا کہنا تھا کہ ایران نے اقوام متحدہ کے سیکریٹری جنرل کی رپورٹ میں ذکر شدہ ایک ایک شق کے منطقی اور مدلل جوابات اقوام متحدہ کے سیکرٹری جنرل کے دفتر ارسال کئے مگر افسوس کی بات یہ ہے کہ ان پر بڑے ہی معنیٰ دار انداز میں کوئی توجہ نہیں دی گئی اور انہیں نظر انداز کر دیا گیا۔

خطیب زادہ کا کہنا تھا کہ جو رپورٹ اقوام متحدہ کے سیکریٹری جنرل کے نام سے شائع کی گئی ہے ان کی بنیاد من گھڑت دعووں اور غیر معتبر ذرائع پر ہے اور اس رپورٹ کی اسکرپٹ دشمن اور دہشت گرد ماہیت کے حامل گروہوں کے الزامات اور دعووں کی بنیاد پر تیار کی گئی ہے۔

انہوں نے کہا کہ اس رپورٹ کا تفصیلی جواب اقوام متحدہ کی انسانی حقوق کونسل کے تمام اراکین کو پیش کر دیا جائے گا۔

متعلقہ مضامین

Back to top button