ایران

ایران کا عالمی سطح پر ہلکے ہتھیاروں کی اسمگلنگ کی مکمل روک تھام کا مطالبہ

شیعیت نیوز: ایران نے عالمی سطح پر ہلکے ہتھیاروں کی اسمگلنگ کی مکمل روک تھام کا مطالبہ کیا ہے۔

اقوام متحدہ کی سلامتی کونسل کے ایک اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے ایران کے مستقل مندوب مجید تخت روانچی نے کہا کہ ایران بیرونی حمایت یافتہ دہشت گردوں کا شکار رہا ہے، اس لئے وہ چھوٹے اور ہلکے ہتھیاروں کی اسمگلنگ کو مؤثر انداز میں روکے جانے کا خواہاں ہے۔

امن و صلح پر چھوٹے اور ہلکے ہتھیاروں کے اثرات کے زیر عنوان سلامتی کونسل کے اجلاس میں ایران کے نمائندے نے کہا کہ ایران بھی دیگر ممالک کی مانند ہلکے ہتھیاروں تک غیر قانونی رسائی کے نتیجے میں ظاہر ہونے والے اجتماعی اقتصادی اور سکیورٹی کے مسائل کو لے کر تشویش کا شکار ہے۔

مجید تخت روانچی کا کہنا تھا کہ ایران غیر ملکی حمایت ہافتہ دہشت گردوں کے نشانے پر رہا ہے اور اُس نے منشیات اور ہلکے ہتھیاروں کی اسمگلنگ کرنے والوں کا بھی خوب سامنا کیا ہے اس لئے وہ اس قسم کے ہتھیاروں کی اسمگلنگ کا ایک جامع اور مؤثر منصوبہ بنانے کی مکمل حمایت کرتا ہے اور ساتھ ہی یہ مطالبہ کرتا ہے کہ اس منصوبے کی متوازن نفاذ کے لئے لازمی ضمانت فراہم کی جائے اور اس راہ میں حائل رکاوٹوں کی شناخت کر کے انہیں بھی برطرف کیا جائے۔

یہ بھی پڑھیں : بسیج کی وطن عزیز کے کونے کونے میں موجودگی باعث افتخار ہے، حجۃ الاسلام محمدرضا جباری

انہوں نے کہا کہ یہ حکومتوں کی ذمہ داری ہے کہ اس چیلنج سے نمٹنے کے لئے وہ تمام تر پہلوؤں کا بغور جائزہ لیں اور اس راہ میں موجود رکاوٹوں اور مشکلات کو برطرف کرنے کے لئے اقدام کریں۔

دوسری جانب ایرانی صدر مملکت نے کہا ہے کہ قرآنی تعلیمات کے مطابق توحیدی مذاہب کے درمیان مشترک پہلو ان کے پیروکاروں کے درمیان اتحاد کو مضبوط کرنا ہے۔

یہ بات صدر سید ابراہیم رئیسی نے منگل کے روز تہران میں تعینات ویٹیکن کے سفیر آندژی یوزوویچ کے ساتھ ایک ملاقات کے دوران گفتگو کرتے ہوئے کہی۔

اس موقع پر ویٹیکن کے سفیر نے صدر رئیسی کو اپنی اسناد تقرری پیش کی۔

انہوں نے کہا کہ جو لوگ آج ظلم و ستم کا شکار ہیں اگر وہ مسیح کی تعلیمات پر توجہ دیں تو وہ مزید ظلم نہیں کریں گے۔ ویٹیکن اس سلسلے میں فعال کردار ادا کر سکتا ہے۔

متعلقہ مضامین

Back to top button