ایران

محمد باقر قالیباف اکثریتی ووٹوں کے ساتھ ایرانی پارلیمنٹ کے اسپیکر منتخب

شیعیت نیوز: ایرانی اسپیکر محمد باقر قالیباف دوبارہ ایرانی پارلیمنٹ کے اسپیکر منتخب ہوگئے۔

ایران کی پارلیمنٹ کے اسپیکر محمد باقر قالیباف آج بروز بدھ پارلیمنٹ کی اعلی انتظامی کمیٹی کے انتخابات میں اکثریتی ووٹوں کے ساتھ دوسری بار پارلیمنٹ کے اسپیکر منتخب ہوگئے۔

ایران کی پارلیمنٹ کا عام اجلاس آج منعقد ہوا، اس اجلاس میں پارلیمنٹ کی اعلی انتظامی کمیٹی کے انتخابات ہوئے ۔

ایران کی گیارہویں پارلیمنٹ کے تیسرے عام اجلاس میں پارلیمنٹ کی اعلی انتظامی کمیٹی کے ارکان کا انتخاب کیا گيا۔ ایران کی اسلامی مجلس شوریٰ (پارلیمنٹ) کے اراکین نے اسپیکر کے انتخاب پر ووٹ کاسٹ کئے اور ایرانی پارلیمنٹ کے موجودہ اسپیکر محمد باقر قالیباف ایک بار پھر 281 ووٹوں میں سے 194 ووٹ لے کر پارلیمنٹ کے اسپیکر کے عہدے پر برقرار رہے۔

تفصیلات کے مطابق تین اور امیدوار مرتضیٰ تہرانی ، الیاس نادران اور فریدون عباسی نے ترتیب میں 53 ووٹ، 23 اور 3 ووٹ حاصل کیے اور10 ووٹوں کو منسوخ کردیا گیا۔

اس سے پہلے مئی 2020کو محمد باقر قالیباف نے 264 ووٹوں میں سے 230 ووٹوں کو حاصل کیا اور پارلیمنٹ کے اسپیکر کے طور پر منتخب کیا گیا۔

یہ بھی پڑھیں : بھلائی کی دعوت اور جہاد کے ہر شعبے میں سب سے پہلے مخاطب علماء اور طلاب ہیں

دوسری جانب اٹامک انرجی آرگنائزیشن کے سربراہ نے کہا کہ ہم ملک کی جوہری صنعت میں اشرافیہ اور ذہین افراد کو فروغ دینے کے مقصد کے ساتھ جوہری توانائی کے اسکولوں کی توسیع دیں گے۔

یہ بات محمد اسلامی نے اپنے انسٹاگرام پیج پر ایک مضمون شائع کرتے ہوئےکہی۔

انہوں نے مزید بتایا کہ ہم اشرافیہ اور ذہیں افراد کی تربیت کو اپنے ایجنڈے میں رکھیں گے اور نئے تعلیمی سال کے آغاز کے ساتھ ہی ان شہروں جس میں تعلیمی صلاحیت ہے لیکن ابھی تک کوئی کارروائی نہیں کی گئی ہے، کے لیے جوہری توانائی کے اسکول قائم کریں گے۔

آخر میں، مجھے یہ کہنا ضروری ہے کہ مجھے یہ کہنا ضروری ہے کہ جوہری توانائی میں صلاحیتوں کی ایک وسیع رینج ہے لہٰذا، ہمیں اعلیٰ صلاحیتوں کو راغب کرنے کے لیے کسی بھی کوشش اور منصوبہ بندی سے دریغ نہیں نہیں کرنا ہوگا۔

متعلقہ مضامین

Back to top button