دنیا

روس نے پرتگال اور فرانس کے سفارت کاروں کو ملک بدر کردیا

شیعیت نیوز: روس کی وزارت خارجہ نے ایک بیان میں کہا ہے کہ روس نے پرتگال اور فرانس کے سفارت کاروں کو ملک سے نکل جانے کا حکم دے دیا۔

اطلاعات کے مطابق روسی وزارت خارجہ نے پرتگال کے سفارت کاروں کو جوابی ردعمل میں ملک بدر کیا ہے۔

روس نے پرتگال کے 5 سفارت کاروں کو ملک سے نکل جانے کا حکم دے دیا۔

پرتگالی سفارت کاروں کو 14 روز میں روس چھوڑنا ہوگا، پرتگال نے پچھلے ماہ 10 روسی سفارت کاروں کو ملک سے نکال دیا تھا۔

دوسری جانب روس کی وزارت خارجہ نے ایک بیان میں کہا ہے کہ روس نے فرانس کے 40 سفارت کاروں کو ملک سے نکال دیا ہے۔

روسی وزارت خارجہ کے مطابق روس نے فرانس کے 40 سفارت کارون کو ملک بدر کردیا ہے۔

یوکرائن میں روس کے فوجی آپریشن کے خلاف یورپی ممالک نے اب تک 300 سے زائد روسی سفارت کاروں کو اپنے ممالک سے بے دخل کر دیا ہے، جوابی ردعمل میں روس سے بھی یورپی ممالک کے سفارت کاروں کو بڑے پیمانے پر ملک سے بےدخل کردیا ہے۔ روس کی طرف سے یورپی ممالک کو منہ توڑ جواب دینے کا سلسلہ جاری ہے۔

یہ بھی پڑھیں : سابق صیہونی وزیراعظم نتین یاھو کو دھمکی آمیز ٹویٹ کرنے پر سزا

دوسری جانب یوکرین کے آزوفتسال کارخانے پر روسی فوج کا پوری طرح تسلط ہو گیا ہے۔

روسی فوج کے ترجمان نے ماریوپل شہر کے آزوفتسال کارخانے پر پوری طرح روسی فورسز کا کنٹرول ہونے کی خبر دی ہے۔

ایگور کوناشنکوف نے کہا کہ یوکرینی فوجیوں سمیت 2400 سے زیادہ جنگجو اپنے اسلحے زمین پر رکھ کر روسی فوج کے سامنے تسلیم ہو گئے۔ یہ لوگ تقریبا ایک مہینے سے اس کارخانے میں روسی فوج کے محاصرہ میں تھے۔

کوناشنکوف نے کہا کہ روسی وزیر دفاع سرگئی شویگو نے جمعے کو صدر ولادیمیر پوتین کو اس آپریشن کے کامیابی سے ختم ہونے کی اطلاع دی ہے۔

روسی میڈیا میں یوکرینی فوجیوں کے تسلیم ہونے کی خبر گشت کر رہی ہے جبکہ یوکرینی حکومت نے اپنے بیان میں تسلیم لفظ کا استعمال نہیں کیا ہے۔

ماریوپل یوکرین کا سب سے بڑا صنعتی و علمی مرکز اور صوبے دونتسک کا دوسرا سب سے بڑا شہر میں شمار ہوتا ہے۔

متعلقہ مضامین

Back to top button