ایران

کوئی طاقت ایرانی سرحدوں پر حملہ کرنے کی جرات نہیں کر سکتی ہے، حبیب اللہ سیاری

شیعیت نیوز: ایران کی فوج کے ڈپٹی کوآرڈینیٹر ایڈمرل حبیب اللہ سیاری نے کہا ہے کہ کسی طاقت کو اسلامی جمہوریہ ایران کی سمندری اور زمینی سرحدوں اور اس سرزمین کی ارضی سالمیت پر حملہ کرنے کی جرات اور صلاحیت نہیں ہے۔

یہ بات ایڈمرل حبیب اللہ سیاری نے پیر کے روز شمالی شہر رشت میں اپنی ایک تقریر میں کہی۔

انہوں نے مزید بتایا کہ اس وقت بھی اسلامی جمہوریہ کا مقدس پرچم دنیا کے کھلے پانیوں میں اٹھایا گیا ہے جس ملک کے بچوں کی سائنس، طاقت، صلاحیت اور صنعت کی علامت ہے۔

ایڈمیرل سیاری نے کہا کہ اس سلسلے میں کسی ملک کو اس سرزمین کے پانی اور مٹی پر ذرا سا جارحیت کرنے کی اجازت نہیں ہے اور سب اس قوم اور نظام کی طاقت اور اقتدار پر آگاہ ہیں۔

انہوں نے بین الاقوامی کھلے پانیوں میں ایرانی بحری جہازوں کی سیکورٹی کے قیام کا حوالہ دیتے ہوئے کہا کہ اب ہم دنیا کے کھلے پانیوں میں ایرانی بحری جہازوں کی سیکورٹی فراہم کرتے ہیں اور اب تک پانچ ہزار بحری جہازوں کے لیے 150 ایسکارٹ آپریشنز کیے جا چکے ہیں۔

یہ بھی پڑھیں : لاکھوں عزادراوں امام علی رضا ؑ کی شہادت پر مشہد مقدس میں جمع

دوسری جانب نائب ایرانی وزیر خارجہ برائے سیاسی امور نے انسانی حقوق کے بارے میں یورپی یونین کے دوہرے معیاروں کا حوالہ دیتے ہوئے کہا ہے کہ وہ یورپی ممالک جو ادویات کی فراہمی سے انکار کرتے ہیں اور معصوم بچوں کی موت کا سبب بنتے ہیں،ایران میں انسانی حقوق کی صورتحال پر کس طرح فکر مند ہو سکتے ہیں؟

یہ بات علی باقری کنی نےکل بروز پیر اپنے ٹوئٹر اکاونٹ میں کہی۔

انہوں نے کہا کہ امریکہ کی غیر قانونی یکطرفہ پابندیوں پر پابندی اور ایران کے بے گناہ لوگوں کے انسانی حقوق کی وسیع پیمانے پر منظم خلاف ورزی جس کو اقوام متحدہ کے خصوصی نمائندے نے بھی تصدیق کی، کے سامنے یورپی یونین کی خاموشی، انسانی حقوق کےمیدان میں اس تنظیم کے دوہرے معیاروں کی علامت ہے۔

انہوں نےاہم سوال یہ ہے کہ وہ یورپی ممالک جو ادویات کی فراہمی پر پابندی عائد کرتے ہیں اور ایپی ڈرمولیسس بلوسا کا شکار بچوں کے دکھ و درد کو کرنے کیلیے ادویات اور مرہم پٹیوں کی فروخت سے انکار کرتے ہیں،ایران میں انسانی حقوق کی صورتحال پر کس طرح فکر مند ہو سکتے ہیں؟

متعلقہ مضامین

Back to top button