عراق

عراق کی حشد العشائری عوامی فورسز کا داعشی عناصر کے خلاف کارروائی

شیعیت نیوز: عراق کے صوبہ دیالہ میں دہشت گردوں کے خلاف کارروائی کا آغاز ہوچکا ہے۔ حشد العشائری کے ایک کمانڈر نے اس خبر کا اعلان کیا ہے۔

عراق کی حشد العشائری عوامی فورسز کے ایک کمانڈر احمد موسی نے بتایا ہے کہ عراق کے مشرق میں واقع صوبہ دیالہ کو داعش دہشت گردوں کے بقایا جات سے صاف کرنے کے لئے ایک وسیع فوجی کارروائی کا آغاز ہوچکا ہے۔

یہ بھی پڑھیں : عراق کے شہر نجف اشرف میں صدام کے زمانے کی اجتماعی قبر دریافت

احمد موسی نے بتایا کہ اس فوجی کارروائی کا مقصد حوض شروین نام کے علاقے سے داعش دہشت گردوں کے ٹھکانوں کا پتہ لگانا اور اطراف کے دیہی علاقوں کو ان عناصر سے پاک کرنا ہے۔

حشد العشائری کے کمانڈر نے گذشتہ روز صوبہ دیالہ میں ہونے والے دہشت گردانہ واقعے کا ذکر کرتے ہوئے کہا کہ اس دہشت گردانہ واقعے میں ملوث افراد کو سزا کے بغیر نہیں چھوڑا جائے گا۔

انہوں نے کہا کہ حشد العشائری حشد الشعبی کے شانہ بشانہ داعش کے سلیپر سیلوں کو ختم کرکے رہے گا۔

یہ بھی پڑھیں : اسرائیل کو تسلیم کرنے کے لیے راہ ہموار کرنے کی جو کوشش کی جا رہی ہے وہ کبھی پایہ تکمیل تک نہیں پہنچ پائے گی،علامہ راجہ ناصر عباس جعفری

عراق میں داعش کی شکست کے باوجود، اس دہشت گرد گروہ کی باقیات دارالحکومت بغداد کے کچھ حصوں اور دیالہ، نینویٰ، صلاح الدین، کرکوک اور انبار کے صوبوں میں وقتاً فوقتاً حرکت کرنے اور لے جانے کے لیے حیرت کا اصول استعمال کرتی ہیں۔ عراقی شہریوں اور فوجیوں کے خلاف اندھی دہشت گردانہ کارروائیوں کو نشانہ بنایا۔

یاد رہے کہ منگل کے روز داعش دہشت گردوں نے صوبہ دیالہ میں واقع ایک فٹ بال اسٹیڈیم پر حملہ کرکے ایک عراقی شہری کو قتل کردیا۔ اس واقعے میں چار دیگر افراد بھی زخمی ہوئے۔

 

متعلقہ مضامین

Back to top button