اہم ترین خبریںلبنان

لبنان میں ہر قسم کی بدامنی اور قتل و غارت کا ذمہ دار امریکی سفارت خانہ ہے، شیخ احمد قبلان

شیعیت نیوز: لبنان کے معروف مفتی اور مذہبی رہنما شیخ احمد قبلان نے کہا ہے کہ ملک میں پیدا ہونے والی ہر بدامنی کا ذمہ دار امریکی سفارت خانہ ہے۔

شیخ احمد قبلان نے بیروت کی بندرگاہ پر دھماکے کی تحقیق کرنے والے قاضی طارق البیطار کو بھی دشمن کا ایجنٹ قرار دیا اور حکومت سے مطالبہ کیا کہ اسے معزول کر کے گرفتار کرے۔

شیخ قبلان نے کہا کہ موجودہ بدامنی اور فتنے کا آغاز قاضی البیطار سے ہوا ہے جس کے نتیجے میں آج کئی بیگناہ لبنانی شہری شہید ہو گئے ہیں۔

یہ بھی پڑھیں : 4 اسرائیلی قیدیوں کی رہائی کے لئے حماس نے شرط لگادی

دوسری جانب حزب اللہ نے بیروت دھماکے کی حقیقت سے پردہ اٹھانے کا عزم ظاہر کیا ہے۔

حزب اللہ کی عاملہ کمیٹی کے نائب سربراہ نے کہا ہے امریکہ اور اسکے ایجنٹوں کے جرائم اور فتنے بیروت دھماکے کی سچائی سے پردہ اٹھانے کے لئے استقامتی محاذ کی کوشش کو نہیں روک پائیں گے۔

شیخ علی دعموش نے کہا کہ حزب اللہ اور امل تحریک قانونی پیرائے میں اس مسئلے کا آخر تک تعاقب کرتے رہیں گے اور جو بھی ان جرائم کو انجام دینے میں ملوث رہے ہیں، وہ مقدمے اور سزا سے بچ نہیں پائیں گے۔

یہ بھی پڑھیں : مقبوضہ وادی گولان میں اسرائیلی فائرنگ سے سابق اسیر مدحت الصالح شہید

انہوں نے نمازِ جمعہ کے خطبے میں جمعرات کو بیروت میں پیش آئے واقعہ کی طرف اشارہ کرتے ہوئے کہا کہ اس طرح کی کرتوتوں کا ہدف حزب اللہ کو اقتدار اور استقامت سے روکنا ہے۔ شیخ دعموش نے کہا کہ کوئی ہمارے صبر کو ہماری مجبوری نہ سمجھے بلکہ ہم دشمنوں کی سازش کو ناکام بنانے کے لئے اختیار کے ساتھ صبر کر رہے ہیں۔

انہوں نے کہا ہم نہیں چاہتے کہ ہمارا ملک فتنے اور خرابی کی طرف بڑھے۔ ہم دشمن کو اسکے ہدف میں کامیاب نہیں ہونے دینگے، دشمن اپنی سازشوں کے مقابلے میں ہمیں بلند پہاڑ کی طرح ڈٹا ہوا پائے گا۔

یاد رہے لبنان کے دارالحکومت بیروت میں بندرگاہ دھماکہ کیس کی تحقیقات کے اعلان کردہ نتائج کے خلاف عوامی مظاہرہ جاری تھا جس پر چند نامعلوم شرپسند افراد نے فائرنگ کر دی اور کئی شہریوں کو شہید اور زخمی کر دیا ہے۔

ٹیگز

متعلقہ مضامین

Back to top button
Close