اہم ترین خبریںیمن

بہار فتح آپریشن کے دوران صوبہ مآرب اور شبوہ میں یمنی فوج کی شاندار پیشقدمی

شیعیت نیوز: یمنی فوج کے ترجمان یحیی السریع نے صوبہ مآرب اور شبوہ میں جارح سعودی اتحاد کے خلاف جاری بہار فتح آپریشن کی مزید تفصیلات جاری کردی ہیں۔

یمنی فوج کے ترجمان یحیی السریع نے کہا ہے کہ ’’بہار فتح‘‘ فوجی آپریشن کے دوران صوبہ مآرب اور شبوہ کے متعدد علاقوں کو جارح سعودی اتحاد کے قبضے سے آزاد کرالیا گیا ہے۔

انہوں نے بتایا کہ صوبہ مآرب اور شبوہ میں جاری وسیع فوجی آپریشن کے دوران یمنی فوج اور عوامی رضاکار فورس انصار اللہ کے ڈرون، میزائل اور اینٹی ایئرکرافٹ یونٹ بھی حصہ لے رہے ہیں۔

یمنی فوج کے ترجمان نے یہ بات زور دے کر کہی کہ بہار فتح آپریشن کے دوران حاصل ہونے والی کامیابی کی مکمل تفصیلات آپریشن کی تکمیل کے بعد جاری کی جائیں گی تاہم اس کے اہم گوشوں سے قوم اور میڈیا کو آگاہ کرتے رہیں گے۔

یہ بھی پڑھیں : نیو کیسل فٹبال کلب کی خریداری، محمد بن سلمان کے لئے مصیبت بن گئی

یحیی السریع نے پچھلے ہفتے اتوار کے روز ایک پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے صوبہ مآرب کے متعدد شہروں کو جارح سعودی اتحاد اور اس کے کرائے کے فوجیوں سے آزاد کرالیے جانے کا اعلان کیا تھا۔

یمن کا صوبہ مآرب تیل اور گیس کے قدرتی ذخائر سے مالا مال ہونے کی وجہ سے انتہائی اہمیت کا حامل ہے اور ماہرین کے مطابق صوبہ مآرب کی آزادی کی صورت میں یمن میں سعودی فوجی اتحاد کا کام تمام ہوجائے گا اور اس ملک کے اہم شہروں تک اس کی زمینی رسائی ختم ہوکے رہ جائے گی۔

واضح ر ہے کہ سعودی عرب نے پچھلے چھے برس سے زائد عرصے سے یمن کو جارحیت کا نشانہ بنانے علاوہ مغربی ایشیا کے اس غریب عرب اور اسلامی ملک کا زمینی فضائی اور سمندری محاصرہ بھی کر رکھا ہے۔ مارچ دوہزار پندرہ سے جاری اس وحشیانہ جارحیت میں، امریکہ، برطانیہ ، متحدہ عرب امارت اور بعض دوسرے عرب ممالک بھی سعودی عرب کا ساتھ دے رہے ہیں۔

اس کے علاوہ سعودی اتحاد نے یمن کی زمینی، سمندری اور ہوائی ناکہ بندی کر رکھی ہے جس کی وجہ سے اس ملک کو دواؤں اور اشیاء خوردونوش کی شدید قلت کا سامنا ہے۔

ٹیگز

متعلقہ مضامین

Back to top button
Close