اہم ترین خبریںیمن

سعودی عرب نے حج پر پابندی لگا کر امریکہ و اسرائیل کی خدمت کی، یمنی وزارت ہدایت

شیعیت نیوز: سعودی عرب نے امریکی و اسرائیلی منصوبوں کو عملی جامہ پہنانے اور ان کی خدمت کرنے کی خاطر مسلسل دوسرے سال حج پر پابندی عائد کی ہے، یہ بات یمنی وزارت ہدایت و امور حج نے کہی۔

فارس نیوز کے مطابق یمنی وزارت ہدایت و امور حج نے ایک بیان جاری کیا ہے جس میں کہا گیا ہے کہ بہتر یہ تھا کہ سعودی حکام حج پر پابندی عائد کرنے کے بجائے حج میں غیر ملکی مسلمانوں کی شرکت کو یقینی بنانے کے لئے درست منصوبے اور تدبیر سے کام لیتے۔

یمن کی مذکورہ وزارت کے بیان میں آیا ہے کہ حج پر پابندی سے دشمنان اسلام کو فائدہ پہونچ رہا ہے جن میں امریکہ اور اسرائیل سر فہرست ہیں جو حج کو اپنے لئے ایک بڑا خطرہ تصور کرتے ہیں، کیوں کہ حج در حقیقت ایک اتحاد امت کی تقویت کے لئے ایک اسلامی کانگریس ہے۔

یہ بھی پڑھیں : سعودی صحافی جمال خاشقجی کے قتل سے متعلق نئی تفصیلات سامنے آگئیں

یمنی وزارت ہدایت و امور حج نے امت اسلامیہ اور دنیا کے سبھی حریت پسندوں سے اپیل کی کہ وہ آل سعود کے اس خودسرانہ اقدام کے خلاف آواز اٹھائیں کیوں کہ اسکے اس اقدام پر خاموشی کسی صورت میں جائز نہیں ہے۔

خیال رہے کہ سعودی عرب کی وزارت حج نے ہفتے کے روز ایک بیان جاری کر کے یہ اعلان کیا تھا کہ کورونا کے پھیلاؤ کے پیش نظر اس سال بھی گزشتہ برس کی مانند کوئی بھی غیر ملکی مسلمان حج پر نہیں آ سکے گا اور صرف اندرون ملک رہائش پذیر ملکی و غیر ملکی افراد ہی حج کی سعادت حاصل کر سکیں گے۔

آل سعود حکومت نے اس سال مجموعی طور پر اٹھارہ سے پینسٹھ سال تک کی عمر کے کل ساٹھ ہزار افراد کو حج کرنے کی اجازت دی ہے۔

ٹیگز

متعلقہ مضامین

Back to top button
Close