اہم ترین خبریںپاکستان

داعش کے مرکزلال مسجد اورتکفیری انتہاپسندی کے خلاف جہدمسلسل شہیدخرم زکی کو بچھڑے 5 برس بیت گئے

تفصیلات کے مطابق پاکستان میں تکفیریت کے خلاف توانا آواز خرم زکی کو ہم سے بچھڑے 5 برس بیت گئے لیکن ان کی یاد ، ان کے جذبات اور ان کا جوش وولولہ آج بھی ہمارے دلوں میں زندہ ہے ۔

شیعیت نیوز: پاکستان میں عالمی دہشت گرد گروہ داعش کے مرکزلال مسجد اورتکفیری انتہاپسندی کے خلاف جہدمسلسل خرم زکی کو ملک دشمن سعودی نوازدہشت گرد تنظیم کالعدم سپاہ صحابہ کی فائرنگ سے شہید ہوئے آج 5 برس مکمل ہوگئے۔ شہید کے اہل خانہ اور معصوم بچے آج بھی ریاست پاکستان سے انصاف کے طلبگار ہیں، شہید خرم زکی کا قاتل اورنگزیب فاروقی آزاد اور قانون نافذ کرنے والےادارے اس کو پروٹوکول فراہم کرنےمیں مصروف ہیں۔

تفصیلات کے مطابق پاکستان میں تکفیریت کے خلاف توانا آواز خرم زکی کو ہم سے بچھڑے 5 برس بیت گئے لیکن ان کی یاد ، ان کے جذبات اور ان کا جوش وولولہ آج بھی ہمارے دلوں میں زندہ ہے ۔

یہ بھی پڑھیں: مظلوموں کے حق میں آواز اٹھانا جرم بن گیا، کوہاٹ میں یوم القدس ریلی پر پولیس کا کریک ڈاؤن

واضح رہے کہ 7 مئی 2016 کی رات کراچی کے علاقہ نارتھ کراچی میں ہوٹل پر اپنے دوستوں کے ساتھ بیٹھے خرم زکی کو چار دہشتگردوں نے فائرنگ کرکے شہید کردیا تھا، پولیس کے مطابق خرم زکی کو پانچ گولیاں لگیں تھیں ، جبکہ خرم زکی کے ہمراہ ان کا ایک اور ساتھی بھی شہید جبکہ دوسرا شدید زخمی ہوا تھا۔

واضح رہے کہ خرم زکی نے لال مسجد سمیت کالعدم سپاہ صحابہ کی دہشتگردی کے خلاف جنگ شروع کررکھی تھی اس لیئے انہیں کئی براہ راست مولانا عبدالعزیز ، ام حسان اور دیگر دہشتگرد جماعتوں کی جانب سے دھمکیاں دی جارہی تھیں، افسوس 5 برس گذر جانے کے باوجود حکومت اور سیکورٹی ادارے ان دہشتگردوں کے خلاف کوئی کاروائی انجام نہیں دے سکے ، ہر بار کی طرح اس بار بھی شیعہ ٹارگٹ کلنگ کو فرقہ وارانہ رنگ دیگر اس خون ناحق پر مٹی ڈال دی گئی۔

متعلقہ مضامین

Back to top button
Close