اہم ترین خبریںمقبوضہ فلسطین

4 اسرائیلی قیدیوں کی رہائی کے لئے حماس نے شرط لگادی

شیعیت نیوز: فلسطین کی تحریک حماس کی فوجی شاخ القسام بریگیڈ نے کہا ہے کہ 4 اسرائیلی قیدیوں استقامتی محاذ کی شرطوں پر رہا ہوں گے۔

عزالدین قسام نے اپنے ٹیلیگرام اکاؤنٹ میں 4 اسرائیلی قیدیوں کی تصویر شائع کرنے کے ساتھ ہی کہا ہے کہ یہ صیہونی فوجی صرف استقامتی تنظیم کی شرطوں پر ہی رہا ہوں گے۔

فلسطین انفارمیشن سینٹر کے مطابق عزالدین القسام بریگیڈ نے کہا کہ جب تک فلسطینی قیدی رہا نہیں ہو نگے اس وقت تک اسرائیلی فوجی بھی رہائی کا منہ نہ دیکھ پائیں گے اور حماس اس شرط پر صیہونی حکومت کے ساتھ قیدیوں کی رہائی کا معاہدہ کرنے کے لئے تیار ہے کہ وہ استقامتی محاذ کے مطالبوں کو مانے۔

اس درمیان حماس کے پولت بیورو کے ممبر خلیل الحیہ نے صیہونی حکومت کو فلسطینی اسیروں بالخصوص بھوک ہڑتال کرنے والے فلسطینی قیدیوں کو زد و کوب کرنے کے انجام سے خبردار کیا۔ انہوں نے کہا شالیت معاہدے کی سالگرہ پر ہم فلسطینی قیدیوں سے کہنا چاہتے ہیں کہ ہم انہیں اکیلا نہیں چھوڑیں گے۔

یہ بھی پڑھیں : مقبوضہ وادی گولان میں اسرائیلی فائرنگ سے سابق اسیر مدحت الصالح شہید

اسی طرح انہوں نے حماس کے اعلی عہدیداروں پر مشتمل وفد کے قاہرہ دورے اور انکی مصر کے خفیہ ادارے کے عہدیداروں سے ملاقات کے نتیجے کے بارے میں کہا کہ ان ملاقاتوں میں مصر کے ساتھ روابط، غزہ کی ناکہ بندی اور اسکی تعمیر نو، قیدیوں کے معاملے اور صیہونی دشمن کے حملوں کے بارے میں تبادلہ خیال ہوا۔

دوسری جانب اسلامی مزاحمتی تحریک حماس کے عسکری ونگ عزالدین القسام بریگیڈ کے ایک سینیر کمانڈر نافذ احمد الحلو گذشتہ روز حرکت قلب بند ہونے سے انتقال کرگئے۔ ان کی عمر 55 سال تھی۔

رپورٹ کے مطابق القسام بریگیڈ کی طرف سے جاری ایک بیان میں کہا گیا ہے کہ کمانڈر الحلو جبالیا کیمپ میں تھے جہاں انہیں دل میں تکلیف کے بعد اسپتال لے جایا گیا تاہم وہ جاں بر نہ ہوسکے اور اسپتال میں دم توڑ گئے۔

بیان میں کمانڈر الحلو کی ناگہانی موت پر القسام بریگیڈ نے افسوس کا اظہار کرتے ہوئے مرحوم کی درجات کی بلندی اور پسماندگان کے صبر کے لیے دعا کی ہے۔ القسام بریگیڈ نے کمانڈر الحلو کی فلسطینی تحریک مزاحمت میں خدمات اور قربانیوں کو سراہا۔

ٹیگز

متعلقہ مضامین

Back to top button
Close