ایران

معاشی پابندیوں کے باوجود پیداوار کے فروغ کی قومی مہم کا سلسلہ جاری رہا، روحانی

شیعیت نیوز: ایران کے صدر مملکت نے کہا ہے کہ ہمیں اس بات پر فخر ہے کہ کورونا وبا کے پھیلاؤ اور ملک کے خلاف شدید معاشی پابندیوں کی صورتحال میں پیداوار کے فروغ کی قومی مہم کا سلسلہ جاری رہا۔

ان خیالات کا اظہار ڈاکٹر حسن روحانی نے بروز جمعرات کو ملک میں پیداوار کے فروغ کے سلسلے میں تدبیر اور امید کے عنوان کے تحت منصوبوں کے نفاد کی قومی مہم کے 81 ویں ہفتے میں ویڈیو کانفرنس کے ذریعے منعقدہ تقریبات میں گفتگو کرتے ہوئے کیا۔

انہوں نے کہا کہ اللہ رب العزت کی مدد سے ہم پیداوار کے فروغ اور اس کی راہ میں حائل رکاوٹوں کو دور کرنے کے سلسلے میں انتہائی اہم کامیابیاں حاصل کی ہیں اور ایرانی عوام آج کھیلوں اور بندرگاہوں کے میدان میں ایک دن میں اربوں منصوبوں کی افتتاحی تقریبوں کا مشاہدہ کرتے ہیں جو انتہائی قابل قدر ہے۔

صدر روحانی نے کہا کہ بارہویں حکومت کے اعزازات میں سے ایک، ابتدا ہی نقل و حمل کے بنیادی ڈھانچوں کی تقویت پر اقدامات اٹھانا ہے؛ آمدورفت اہم اور بنیادی مسائل میں سے ایک ہے اور ملک کی ترقی اور لوگوں کی زندگی کے ایک ستون کے طور پر ملکی اور غیر ملکی شعبوں میں مسافروں اور سامان کی نقل و حرکت کیلئے انتہائی اہمیت کا حامل ہے۔

یہ بھی پڑھیں : یمن جنگ کے دوران برطانیہ سعودی عرب کو 20 ارب پاونڈ کا اسلحہ فروخت کر چکا ہے

انہوں نے کہا کہ نقل و حمل کے میدان میں، سڑکیں، ریلوی، فضائی، سمندری اور بندرگاہوں خاص طور پر ٹرانزٹ کے شعبوں بہت اچھے اور تعمیری کام کیے گئے ہیں۔

ایرانی صدر نے کہا کہ گیارہویں اور بارہویں حکومت کے دوران، ایرانی شاہراہوں کی لمبائی 20 کلومیٹر سے بڑھ کر 20 ہزار کلومیٹر تک پہنچ گئی؛ اسی عرصے کے دوران ملک میں 8 ہزار کلومیٹر شاہراہوں کی تعمیر کی گئی اور در حقیقت شاہراہوں میں سالانہ ایک ہزار کلومیٹر کا اضافہ ہوگیا ہے۔

انہوں نے مزید کہا کہ ایران میں اسلامی انقلاب سے پہلے صرف 20 کلومیٹر شاہراہ موجود تھیں جس کی لمبائی گیارہویں حکومت کے دوران 12 ہزار 300 کلومیٹر تک پہنچ گئی اور بارہویں حکومت کے اختتام تک اس میں کم سے کم 8 ہزار کلومیٹر کا اضافہ ہوکر 20 ہزار کلومیٹر تک پہنچ جائے گی۔

ٹیگز

متعلقہ مضامین

Back to top button
Close