دنیا

آذر بائیجان کے صدر کا اسرائیل کے ڈرون استعمال کرنے کا اعتراف

شیعیت نیوز: آذر بائیجان کے صدر نے اسرائیل کے ڈرون استعمال کرنے کا اعتراف کیا ہے۔

رپورٹ کے مطابق آذر بائیجان کے صدر الھام علی اف نے آذربائیجان کی قومی دفاعی میگزین کو دیئے گئے انٹرویو میں اس بات کا اعتراف کیا کہ باکو نے تقریبا 10 سال قبل سے اسرائیل سے ڈرون طیارے خریدنے شروع کئے۔

انہوں نے کہا کہ گزشتہ سال آرمینیا اور آذربائیجان کے مابین قرہ باغ کی دوسری جنگ میں ہم نے اسرائیل کے ڈرون استعمال کئے۔

آذربائیجان اور اسرائیل کے مابین مختلف شعبوں میں قریبی تعلقات ہیں تاہم اس ملک کے عوام فلسطینی عوام پر اسرائیل کی جارحیت کی وجہ سے اسرائیل کے ساتھ تعلقات کے شدید مخالف ہیں۔

یہ بھی پڑھیں : شہید سلیمانی کے قتل کے مجرموں کو انصاف کے کٹہرے میں لایا جائے، وزیر خارجہ عبداللہیان

دوسری جانب غاصب صیہونی حکومت کے بانی کے بیٹے کا کہنا ہے کہ میں صیہونی حکومت کے مستقبل کو پوری طرح سے تاریک دیکھتا ہوں۔

عرب پوسٹ کے مطابق 95 سالہ یعقوب شاریت نے صیہونی اخبار ہارٹس سے گفتگو میں کہا کہ مجھ کو صیہونی حکومت کا مستقبل بہت تاریکی میں ڈوبا ہوا نظر آ رہا ہے۔

صیہونی حکومت کے پہلے وزیر خارجہ اور دوسرے وزیر اعظم کے بیٹے یعقوب شاریت نے کہا کہ صیہونی منصوبے کی پیدائش، جرم کے پیٹ سے ہوئی۔

اسرائیل کے تاریک مستقبل کے بارے میں انہوں نے کہا کہ میری عمر اب تقریبا 95 سال ہے، میری اقتصادی حالت بھی اچھی نہيں ہے۔

یعقوب شاریت کا کہنا تھا کہ ہر طرح کے آرام کے باوجود میں اپنے پوتوں اور نواسوں یعنی اسرائیل کی نئی نسل کے مستقبل کو لے کر بہت پریشان ہوں، مجھے ان کے کل کی تشویش ہے۔

1948 میں اسرائیل کی تشکیل کے اعلامیے پر دستخط کرنے والے موشہ شاریت کے 95 سالہ بیٹے یعقوب شاریت کا کہنا ہے کہ میں یہاں پر یعنی صیہونی حکومت میں ہوں، اس عمر میں میں کہیں بھی نہیں جا سکتا۔ اب میں یہ سوچ کر پریشان رہتا ہوں کہ اسرائیل کا کیا ہوگا کیونکہ یہ ایک تسلط پسند حکومت ہے جو دوسروں پر مظالم اور حملے کرتی ہے۔

ٹیگز

متعلقہ مضامین

Back to top button
Close