اہم ترین خبریںپاکستان

علماءوذاکرین کانفرنس نے پالیسی ساز اداروں کو واضح پیغام دے دیا کہ عزاداری پرکوئی قدغن قبول نہیں کی جائےگی، علامہ عبد الخالق اسدی

انہوں نے کہا کہ جس طرح پورے پاکستان کے جید علمائے کرام اور زاکرین عظام کے اس نمائندہ اجتماع کے ذریعے ملت کی حقیقی معنوں میں ترجمانی ہوئی ہے اس ہی طرح اس سال دس محرم کو شہید ہونے والے سانحہ بہاولنگر کے چہلم پر عظیم الشان کانفرنس کا انعقاد کیا جائے گا

شیعیت نیوز: مجلس وحدت مسلمین پنجاب کے صوبائی سیکرٹری جنرل علامہ عبدالخالق اسدی نے کہا ہے کہ گزشتہ روز منعقد ہونے والی علماء و زاکرین کانفرنس ملت تشیع کیلئے تاریخ ساز دن ہے. اس طرح کی کانفرنس داخلی و قومی وحدت کیلئے بہت زیادہ اہمیت کی حامل ہیں. مادر وطن پاکستان کی سالمیت کیلئے شہید ہونے والے 80 ہزار شہداء کا پاک خون ہرگز رائیگاں نہیں جائے گا. ان شہداء کے پاک لہو کی تاثیر کی بدولت پاکستان میں امن و امان ہوگا سازشیں کرنے والے ذلیل و رسوا ہو جائیں گے۔

علامہ عبدالخالق اسدی نے علماء و ذاکرین کانفرنس منعقد کرنے پر سیکرٹری جنرل مجلس وحدت مسلمین پاکستان علامہ راجہ ناصر عباس جعفری، شیخ محسن نجفی اور علامہ سید ساجد علی نقوی کی اس کاوش کو سراہتے ہوئے کہا کہ اس کانفرنس کے ذریعے پوری دنیا کے لوگوں کو یہ پیغام دیا گیا ہے کہ ملت جعفریہ پاکستان متحد ہے اور قوم و ملت کی ترقی و خوشحالی کیلئے یکجہتی کے ساتھ فعالیت کی انجام دہی کیلئے کوشاں ہیں۔ انہوں نے کہا کہ اس کانفرنس کے ذریعے ارباب اختیار کو باور کروا دیا گیا ہے کہ اربعین حسینی پر مکتب تشیع کے اکابرین ایک پرچم یعنی پرچم حسینی تلے یکجا ہیں اور چہلم امام حسین علیہ السلام پر نکلنے والے پیادہ جلوسوں کی بھرپور حمایت کرتے ہیں۔

یہ بھی پڑھیں: متعصب سندھ پولیس اور کالعدم سپاہ صحابہ سندھ بھرمیں اربعین واک روکنے کیلئے متحد

انہوں نے کہا کہ امت واحدہ کی ساخت کو سبوتاژ کرنے والے ایم آئی سکس و سی آئی اے اور ان کے ایجنٹس کو اس کانفرنس کی وجہ سے مایوسی ہوئی ہے کہ علماء و زاکرین نے ایک طرف اتحاد بین المومنین پر زور دیا ہے تو دوسری جانب اتحاد بین المسلمین کا شیرازہ بکھیرنے والوں کی شدید الفاظ میں مذمت کی گئی ہے. مسلمانوں کو آپس میں دست و گریباں کروانے کی سازشیں رچانے والے اسلام و پاکستان دشمن عناصر کو بے نقاب کیا گیا ہے اور یہ بات واضح کر دی گئی ہے کہ ان کی سازشیں دم توڑ چکی ہیں اب کھیل انسانیت، اسلام و پاکستان دشمنوں کے ہاتھوں میں نہیں رہا۔

انہوں نے کہا کہ اس عظیم الشان کانفرنس کے ذریعے پالیسی ساز اداروں کو بھی واضح پیغام دیا گیا ہے کہ عزاداری سید الشہداء امام حسین علیہ پر کسی قسم کی قدغن کوبرداشت نہیں کیا جائے گا غیر قانونی شیڈول فور سرکار کی مدعیت میں ہماری عبادت پر درج کی جانے والی جھوٹے مقدمات کے خلاف جلد ایک تحریک شروع ہو گی اور عزاداری سید الشہداء امام حسین علیہ کے خلاف ہونے والی تمام سازشیں دم توڑ جائیں گی۔

یہ بھی پڑھیں: خیرپور پولیس کی شیعہ دشمنی جلوس اربعین میں شریک عزاداروں کا راستہ روک لیا، مہران ہائی پر دھرنا شروع

انہوں نے کہا کہ جس طرح پورے پاکستان کے جید علمائے کرام اور زاکرین عظام کے اس نمائندہ اجتماع کے ذریعے ملت کی حقیقی معنوں میں ترجمانی ہوئی ہے اس ہی طرح اس سال دس محرم کو شہید ہونے والے سانحہ بہاولنگر کے چہلم پر عظیم الشان کانفرنس کا انعقاد کیا جائے گا اور شہدائے بہاولنگر کو خراج عقیدت پیش کیا جائے گا اور آئندہ کی حکمت عملی پیش کی جائے گی۔

متعلقہ مضامین

Back to top button
Close