اہم ترین خبریںپاکستان

ہماری عزاداری امن و اتحاد کی علامت ہے، علامہ عارف حسین واحدی

علامہ عارف واحدی نے کہا کہ 1400 سال سے عزاداری سید الشہداء میں مسلسل رکاوٹیں ڈالی جاتی رہی ہیں اور سازشیں کی جاتی رہیں لیکن ان شاء اللہ یہ مقدس مشن ہے

شیعیت نیوز: شیعہ علماء کونسل پاکستان کے مرکزی سیکرٹری جنرل علامہ عارف حسین واحدی دینی درسگاہ سلطان المدارس سرگودھا کے سالانہ اجلاس میں شرکت کی اور اور دوسری نشست میں خطاب کرتے ہوئے تاریخ اسلام میں علماء تشیع کی خدمات پر تفصیل سے روشنی ڈالی اور علمی دینی خدمات اور ملی حقوق کے لیے علماء کی جدوجہد اور قربانیوں پہ گفتگو کی۔ اس کے علاوہ علامہ سید ساجد علی نقوی کا سلام شرکاء جلسہ تک پہنچایا۔

علامہ عارف حسین واحدی نے علامہ محمد حسین نجفی کی مذہبی ملی خدمات کو سراہا اور علامہ ساجد نقوی کی قیادت میں امت مسلمہ کے اتحاد وحدت کے لئے جو اب تک کاوشیں اور کامیابیاں ہوئی ہیں ان پر اور اس وقت جو حقوق تشیع کے حوالے سے جدوجہد ہو رہی ہے، پر تفصیل سے روشنی ڈالی اور عزاداری کے خلاف پیش آنے والی مسلسل رکاوٹیں اور سازشیں تفصیل سے بیان کی۔

یہ بھی پڑھیں: ایامِ عزائے حسینی اختتام پذیر، شیعیان حیدرکرارؑ نے سوگ بڑھادیا، کل عید زہراؑ منائی جائے گی

علامہ عارف واحدی نے کہا کہ 1400 سال سے عزاداری سید الشہداء میں مسلسل رکاوٹیں ڈالی جاتی رہی ہیں اور سازشیں کی جاتی رہیں لیکن ان شاء اللہ یہ مقدس مشن ہے، کربلا والوں کے مشن کو آگے بڑھانے اور اسلام کو سربلند کرنے کے لیے جتنی زیادہ رکاوٹیں اور سازشیں ہیں، اتنی زیادہ عزاداری اٹھتی ہے اور اسی طرح عزاداری بڑھتی رہے گی لیکن ہم حکومت وقت کو یہ کہتے ہیں کہ ہماری عزاداری امن و اتحاد کی علامت ہے، یہ نواسہ رسول (ص) کا ذکر ہے۔

یہ بھی پڑھیں: اسلام کی حقیقی تعلیما ت ہم تک امام حسن عسکریؑ جیسی عظیم ہستوں کی اذیت ناک قید وعالم ِجوانی میں شہادت کے نتیجے میں پہنچی ہیں، علامہ راجہ ناصرعباس

انہوں نے مزید کہا کہ امام حسین علیہ السلام تمام امت مسلمہ کے ہیں، کسی ایک مسلک کے نہیں ہیں اور تمام امت مسلمہ کے تمام مسالک اپنے اپنے انداز میں ذکر نواسہ رسول کرتے ہیں۔ ہم اپنے انداز میں کرتے ہیں، یہ ہماری مذہبی عبادت ہے، جو آئین کے مطابق ہے۔ آئین اور قانون کی کہیں بھی خلاف ورزی نہیں ہے، عزاداری پر جو ایف آئی آرز ہوئی ہیں اور انتظامیہ کے متعصب افسران نے مومنین کے ساتھ جو رویہ رکھا وہ قابل قبول نہیں ہے، اس کافوری نوٹس لیا جائے۔

ٹیگز

متعلقہ مضامین

Back to top button
Close