دنیا

افغان سکیورٹی فورسز نے ہرات شہر اور ضلع کاروغ سےطالبان کو پسپا کردیا

شیعیت نیوز: افغان سکیورٹی فورسز کا طالبان دہشت گردوں کے خلاف فوجی آپریشن جاری ہے افغان فورسز نے ہرات شہر اور ضلع کاروغ میں طالبان کو پسپا کردیا ہے۔

اطلاعات کے مطابق افغان سکیورٹی فورسز نے ہرات شہر میں جاری لڑائی میں طالبان پر کاری ضرب وارد کی ہے۔

ذرائع کے مطابق ہرات شہر میں جاری لڑائی میں کم از کم 40 طالبان ہلاک ہوگئے جبکہ 40 سے زیادہ زخمی ہوئے۔

دوسری جانب افغانستان کی وزارت دفاع نے ایک بیان جاری کرتے ہوئے کہا ہے کہ جوزجان اور فاریاب صوبوں میں فوج کے فضائی اور زمینی حملوں میں 60 طالبان ہلاک ہوئے۔

اس بیان کے مطابق 37 طالبان جوزجان اور 23 طالبان فاریاب میں ہلاک ہوئے جبکہ ہلاک ہونے والوں میں طالبان کے بعض کمانڈر بھی شامل ہیں۔

گزشتہ روزافغانستان کی مسلح افواج کے ترجمان جنرل اجمل عمرشینواری نے کہا تھا کہ گذشتہ ایک ہفتے کے دوران افغانستان کے مختلف علاقوں میں 154 فوجی کارروائیاں انجام دی گئیں اور ان کارروائیوں میں 8 سو طالبان ہلاک اور زخمی ہوئے۔

یہ بھی پڑھیں : صیہونی حکومت کو ناراض کر کے مجھے خوشی ہوئی ہے، الجزائری کھلاڑی

ان کا کہنا تھا کہ طالبان کے خلاف کی جانے والی کارروائیوں میں زمینی فوجی حملوں کے ساتھ ہی فضائی حملے بھی کئے گئے۔

افغان صدر اشرف غنی نے کہا ہے کہ ہم طالبان کے دہشت گردانہ عزآئم کا مقابلہ کریں گے جبکہ ہم مذاکرات کے لئے بھی آمادہ ہیں۔ انھوں نے کہا کہ پاکستان اور سعودی عرب سمیت دنیا بھر کے علماء کا اتفاق ہے کہ طالبان کی جنگ کی مذہبی حیثیت نہیں ہے۔

دریں اثناء افغانستان میں خانہ جنگی جاری ہے جبکہ اقوام متحدہ نے افغانستان میں عام شہریوں کی ہلاکتوں پر گہری تشویش کا اظہار کیا ہے اور افغان مصالحتی کونسل کے سربراہ نے طالبان کو جنگ و خونریزی کے نتیجے کی جانب خبردار کیا ہے۔

افغانستان کی مسلح افواج کے ترجمان جنرل اجمل عمرشینواری نے کہا ہے کہ گذشتہ ایک ہفتے کے دوران افغانستان کے مختلف علاقوں میں ایک سو چون فوجی کارروائیاں انجام دی گئیں اور ان کارروائیوں میں طالبان کے آٹھ سو عناصر ہلاک اور زخمی ہوئے۔ ان کا کہنا تھا کہ طالبان کے خلاف کی جانے والی کارروائیوں میں زمینی فوجی حملوں کے ساتھ ہی فضائی حملے بھی کئے گئے۔

ٹیگز

متعلقہ مضامین

Back to top button
Close